کوورونا وائرس ۲۰۱۹ (کوویڈ ۱۹) کیا ہے

مسبب عنصر

کورونا مرض چین کے صوبے ہوبائی کے علاقے ووہان میں خاص نمونیہ کے مرض کی صورت میں دسمبر 2019 میں نمودار ہوا۔ مقامی محکمہ صحت کی ابتدائی تحقیق کے مطابق، کورونا وائرس 20ٓ19  (کوویڈ ۱۹) اس خاص قسم کے نمونیہ کا ذمہ دار ٹھرایا گیا ہے۔

طبی خواص

مین لینڈ ہیلتھ اتھارٹیز کی طرف سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق، کیسز کی علامات میں بخار، بے چینی، خشک کھانسی اور سانس لینے میں دقت شامل ہیں۔ بعض کیسز میں سنگین حالت ہو جاتی ہے۔ زائد العمر افراد یا ایسے افراد جن کے اندر کوئی بیماری پہلے سے موجود ہو ان کو شدید خطرہ ہوتا ہے کہ ان کی بیماری بگڑ کر سنگین صورت اختیار کر لے۔

منتقلی کا طریقہ اور انکیوبیشن مدت

ٹرانسمیشن کا بنیادی طریقہ سانس کی بوندوں کے ذریعے ہوتا ہے ، وائرس رابطے کے ذریعے بھی منتقل ہوسکتا ہے۔ انکیوبیشن کی مدت کا زیادہ تر اندازہ 1 سے 14 دن تک ہوتا ہے ، عام طور پر 5 دن ہے۔

انتظام

بنیادی علاج معاونت فراہم کرنے پر مشتمل ہے۔

بچاؤ

فی الوقت اس وبائی بیماری کے لیے کوئی ویکسین نہیں ہے۔

مشورہ برائے صحت

عامۃ الناس کو باور کرایا جاتا ہے کہ وہ باہر کم جائیں اور سماجی سرگرمیاں جیسا کہ کھانے پر اکھٹے ہونے یا دیگر اجتماعات میں کمی لائیں، اور جس قدر ممکن ہو دیگر افراد کے ساتھ میل جول کے وقت مناسب فاصلہ رکھیں۔

ہمہ وقت سخت شخصی اور ماحولیاتی حفظان صحت برقرار رکھنا انفیکشن کے خلاف شخصی تحفظ اور ِکمیونٹی میں بیماری کے پھیلاؤ کے حوالے سے کلید ہے۔